آج شاہزیب خانزادہ کے ساتھ – 13 ستمبر 2019

آج شاہزیب خانزادہ کے ساتھ – 13 ستمبر 2019

میں ہوں شاہ زیب خانزادہ، پنجاب ایک کیفیت کی طرف بڑھا ہے، جو مسئلہ ہے وہ اپنی جگہ برقرار ہے اس وقت پنجاب کا سب سے بڑا مسئلہ بنا ہوا ہے ترجمانی کا یارو کسی کا مسئلہ نہیں ہے، کارکردگی ٹھیک نہیں ہوگی تو ترجمان تبدیل کرنے سے بھی کچھ نہیں ہوگا۔ کارکردگی ٹھیک نہیں ہوگی تو سرکاری افسران تبدیل کرنے سے بھی کوئی فرق نہیں پڑے گا۔

شاہزیب خانزادہ کا گزشتہ پروگرام دیکھیں

مگر کارکردگی پر توجہ کم دی جارہی ہے ترجمان بدلے جارہے ہیں، بیوروکریسی میں تبدیلیاں لائی جا رہی ہیں۔ پنجاب حکومت میں بڑی تبدیلی آگئی ہے، پنجاب اسمبلی ملک اسد کھوکھر کو کابینہ میں شامل کیا گیا ہے اس کے علاوہ وزیراعظم عمران خان کے قریبی ساتھی عون چوہدری کو وزیر اعلی پنجاب کے مشیر کی حیثیت سے ہٹا دیا گیا ہے ان کی جگہ آصف محمود کو مشیر بنا دیا گیا ہے۔

آمدن سے زائد اثاثے، خورشید شاہ گرفتار

مگر سب سے بڑی اور اہم تبدیلی وزیراعلیٰ پنجاب کے ترجمان شہباز گل کی تھی جنھوں نے آج استعفیٰ دے دیا اور وزیر اعلی پنجاب کے ہٹائے جانے سے پہلے انہوں نے استعفیٰ دے دیا۔ گزشتہ روزشہباز گل نے کہا کہ اگر کسی کو وزیراعلیٰ پنجاب پسند نہیں تو وہ پارٹی چھوڑ دیں اور اگلے دن خود استعفیٰ دے دیا۔

ترجمان شہباز گل کا بیان

یہاں پر میں وزیراعظم عمران خان کا میسج بھی دینا چاہتا ہوں انھوں نے کھلی لفظوں میں آپ کو میسج کیا ہے اور یہ نظریہ عمران خان صاحب کا تھا پی ٹی آئی کا، وزیراعلی پنجاب بنانے کا فیصلہ انہوں نے کیا ہے اگر کسی کو وزیر اعلی پنجاب پسند نہیں تو وہ پارٹی چھوڑ دے۔ ایک بندے کو گول کیپر کھڑا کیا ہے۔ جس جو اچھا نہیں لگ رہا تو وہ پارٹی چھوڑ دے۔ ان کی شکل اچھی نہیں تو میں کچھ نہیں کرسکتا۔ وزیراعظم نے ان کو پانچ سال کیلئے وزیر اعلی پنجاب مقرر کیا ہے

آج شاہزیب خانزادہ کے ساتھ مکمل ٹاک شو دیکھیں

Be the first to comment

Leave a Reply

Your email address will not be published.


*